تیری قربت کے عارضی لمحے

احمد طارق

تیری قربت کے عارضی لمحے

احمد طارق

MORE BYاحمد طارق

    تیری قربت کے عارضی لمحے

    مجھ کو کافی ہیں سرسری لمحے

    تو بھی ہو اور تیری خوشبو بھی

    لمس کے جاوداں غنی لمحے

    پیر پھسلا مرا میں ڈوب گیا

    تیری آنکھوں میں داخلی لمحے

    اس کو آئی حیا تو کب آئی

    میری جندڑی کے آخری لمحے

    لمحہ لمحہ تجھے ستائیں گے

    ایسے ظالم ہیں آدمی لمحے

    یار سے بچ بھی جائے تو احمدؔ

    تجھ کو کھائیں گے سازشی لمحے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY