تھا خفا مجھ سے بد گمان بھی تھا

رشمی صبا

تھا خفا مجھ سے بد گمان بھی تھا

رشمی صبا

MORE BY رشمی صبا

    تھا خفا مجھ سے بد گمان بھی تھا

    اور وہی مجھ پہ مہربان بھی تھا

    جب ستاروں کی زد میں آئی میں

    تب لگا سر پہ آسمان بھی تھا

    پھول کتنے کھلے تھے دل میں مگر

    اک وہیں زخم کا نشان بھی تھا

    کس سے کرتی میں دھوپ کا شکوہ

    میرا سورج ہی سائبان بھی تھا

    ضبط احساس ہم بھی کر لیں گے

    اس یقیں پر صباؔ گمان بھی تھا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY