تھک گئے تم حسرت ذوق شہادت کم نہیں

منشی امیر اللہ تسلیم

تھک گئے تم حسرت ذوق شہادت کم نہیں

منشی امیر اللہ تسلیم

MORE BYمنشی امیر اللہ تسلیم

    تھک گئے تم حسرت ذوق شہادت کم نہیں

    مجھ سے دم لے لو اگر تیغ ستم میں دم نہیں

    دردمندان ازل رکھتے نہیں درماں کا غم

    سینۂ صد چاک گل منت کش مرہم نہیں

    روز مرتے ہیں ہزاروں دیکھ کر نیرنگ حسن

    گر یہی عالم تمہارا ہے تو یہ عالم نہیں

    مر مٹے ہم عشق کے شہرے وہی ہیں چار سو

    شور رسوائی پس مردن بھی اپنا کم نہیں

    نالۂ آتش فشاں یوں ہی اگر ہے اوج پر

    تو نہیں اے آسمان فتنہ گر یا ہم نہیں

    بے ثباتی پر بہار باغ کی روتا ہے چرخ

    روئے گل پر قطرہ ہائے اشک ہیں شبنم نہیں

    خوش ہیں میرے مرنے سے تسلیمؔ خویش و اقربا

    خانۂ شادی ہے گویا خانۂ ماتم نہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    تھک گئے تم حسرت ذوق شہادت کم نہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے