تری نگاہ نے اپنا بنا کے چھوڑ دیا

شیون بجنوری

تری نگاہ نے اپنا بنا کے چھوڑ دیا

شیون بجنوری

MORE BYشیون بجنوری

    تری نگاہ نے اپنا بنا کے چھوڑ دیا

    ہنسا کے پاس بلایا رلا کے چھوڑ دیا

    حسین جلووں میں گم ہو گئی نظر میری

    یہ کیا کیا کہ جو پردہ اٹھا کے چھوڑ دیا

    جنوں میں اب مجھے اپنی خبر نہ غیروں کی

    یہ غم نے کون سی منزل پہ لا کے چھوڑ دیا

    جو معرفت کے گلابی نشے سے ہو بھر پور

    وہ جام تو نے نظر سے پلا کے چھوڑ دیا

    کسی نے آج زمانے کے خوف سے شیونؔ

    ہمارا نام بھی ہونٹوں پہ لا کے چھوڑ دیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے