تجھے دیکھا مری آنکھوں میں جب شادابیاں آئیں

مونیکا سنگھ

تجھے دیکھا مری آنکھوں میں جب شادابیاں آئیں

مونیکا سنگھ

MORE BY مونیکا سنگھ

    تجھے دیکھا مری آنکھوں میں جب شادابیاں آئیں

    تری بے مہر آنکھوں میں تبھی بے زاریاں آئیں

    نہ جانے اور کیا کیا کہہ رہی تھی وادیاں مجھ سے

    ترا جب ذکر چھیڑا تھا عجب خاموشیاں آئیں

    حصار یاس کی جانب صدائیں آ رہی گرچہ

    محض چہرے نہیں آئے کئی پرچھائیاں آئیں

    ہمیں شہرت بلندی تک اگر لے کے چلی آئی

    مگر سائے تلے اس کے کئی ناکامیاں آئیں

    نہیں ہے عشق پہلا سا نہ پہلی سی کشش باقی

    مگر اب ساتھ جینے کی کئی مجبوریاں آئیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY