ٹکڑوں میں تم کیوں پھرتے ہو

پونم سوناچھاترا

ٹکڑوں میں تم کیوں پھرتے ہو

پونم سوناچھاترا

MORE BYپونم سوناچھاترا

    ٹکڑوں میں تم کیوں پھرتے ہو

    کہتے کچھ ہو کچھ دکھتے ہو

    راتوں میں ہے کتنا سناٹا

    ساری راتیں کیوں جگتے ہو

    آنکھوں میں ہیں نیندیں اتنی

    کیا کرتے ہو کب سوتے ہو

    تھک کر میں خود کو کہتا ہوں

    تم چادر سے کیوں لمبے ہو

    جانے والا کب لوٹے گا

    دل سے اب بھی تم بچے ہو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY