تمہیں زیبا نہیں ہرگز صلے کی آرزو رکھنا

آتش بہاولپوری

تمہیں زیبا نہیں ہرگز صلے کی آرزو رکھنا

آتش بہاولپوری

MORE BYآتش بہاولپوری

    تمہیں زیبا نہیں ہرگز صلے کی آرزو رکھنا

    تمہارا کام ہے آتشؔ قلم کی آبرو رکھنا

    اگر دل میں تمنائے نشاط رنگ و بو رکھنا

    مآل خندہ گل کو بھی اپنے رو بہ رو رکھنا

    یہ مے خانہ ہے مے خانہ تقدس اس کا لازم ہے

    یہاں جو بھی قدم رکھنا ہمیشہ با وضو رکھنا

    کہیں طوق و سلاسل ہیں کہیں زہر ہلاہل ہے

    مجھے ہر آزمائش میں الٰہی سرخ رو رکھنا

    زمانے پر کسے معلوم کیسا بار گزرا ہے

    مرا حق و صداقت پر مدار گفتگو رکھنا

    نہ مل پائے سراغ منزل جاناں نہ مل پائے

    ہمارا کام ہے جاری تلاش و جستجو رکھنا

    مأخذ :
    • کتاب : Jada-e-manzil (Pg. 63)
    • Author : Atish Bahawalpuri
    • مطبع : Nirali Duniya Publications (2001)
    • اشاعت : 2001

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY