aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

تو بے وفا ہی سہی تجھ سے پیار آج بھی ہے

عارف حسن  خان

تو بے وفا ہی سہی تجھ سے پیار آج بھی ہے

عارف حسن خان

MORE BYعارف حسن خان

    تو بے وفا ہی سہی تجھ سے پیار آج بھی ہے

    ترے لیے یہ دل و جاں نثار آج بھی ہے

    میں جانتا ہوں نہ آئے گا تو پلٹ کے کبھی

    مگر مجھے تو ترا انتظار آج بھی ہے

    تو لاکھ غیر سہی آج کل تو تھا میرا

    دل و جگر پہ ترا اختیار آج بھی ہے

    ترے بغیر بھی دنیا بہت حسیں ہے مگر

    ترے فراق میں دل بے قرار آج بھی ہے

    خوشی ہے مجھ کو تجھے مل گئی تری منزل

    خوشی سے آنکھ مری اشک بار آج بھی ہے

    نہ بھر سکے گا کبھی اس کو وقت کا مرہم

    ترے کرم سے مرا دل فگار آج بھی ہے

    میں تیرے باغ کا برگ خزاں رسیدہ ہوں

    تو وہ کلی ہے کہ جس پر بہار آج بھی ہے

    بچھڑ کے تجھ سے جیے جا رہا ہے کیوں عارفؔ

    جگر میں یہ خلش نوک خار آج بھی ہے

    مأخذ:

    Kuchh Nazmen Kuchh Ghazalen (Pg. 163)

    • مصنف: Arif Hasan Khan
      • اشاعت: 2011
      • ناشر: Arif Hasan Khan
      • سن اشاعت: 2011

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے