اجالے تیل چھڑکنے لگے اجالوں پر

اعزاز افصل

اجالے تیل چھڑکنے لگے اجالوں پر

اعزاز افصل

MORE BYاعزاز افصل

    اجالے تیل چھڑکنے لگے اجالوں پر

    عجیب وقت پڑا ہے چراغ والوں پر

    تمہارا عالم مستی ڈھکا چھپا ہی سہی

    مری نگاہ ہے ٹوٹے ہوئے پیالوں پر

    تمہارے ذہن میں جو آج چبھ رہے ہوں گے

    میں کل سے سوچ رہا ہوں انہیں سوالوں پر

    نہ اٹھ سکا ترے طرز خرام سے پردہ

    ہوائیں ڈال گئیں خاک پائمالوں پر

    محاکمہ نہ کریں آپ اپنی باتوں کا

    یہ کام چھوڑ دیا جائے سننے والوں پر

    مسلمات سے کیوں قصد انحراف کیا

    عقیدے ٹوٹ پڑے ہیں مرے سوالوں پر

    یہ کیا ضرور کہ رخ سب کا ایک جانب ہو

    فضا کی قید لگاؤ نہ اڑنے والوں پر

    مأخذ :
    • کتاب : Kalam-e-aizaz afzal (Pg. 138)
    • Author : Aizaz Afzal
    • مطبع : Usmania Book Depot

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY