الجھنوں کا شکار ہیں ہم لوگ

محمد عبدالکبیر حنفی

الجھنوں کا شکار ہیں ہم لوگ

محمد عبدالکبیر حنفی

MORE BYمحمد عبدالکبیر حنفی

    الجھنوں کا شکار ہیں ہم لوگ

    یعنی غفلت شعار ہیں ہم لوگ

    کرکے سوراخ بادبانوں میں

    کشتیوں پر سوار ہیں ہم لوگ

    کم تھے پھر بھی شمار ہوتے تھے

    اب فقط بے شمار ہیں ہم لوگ

    کوئی ہم پر کرے حکومت کیوں

    اخروی تاجدار ہیں ہم لوگ

    کوئی ہم کو مٹا نہ پائے گا

    ابن حق کا شعار ہیں ہم لوگ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY