ان آنکھوں کی حیرت اور دبیز کروں

ضیاء المصطفیٰ ترکؔ

ان آنکھوں کی حیرت اور دبیز کروں

ضیاء المصطفیٰ ترکؔ

MORE BY ضیاء المصطفیٰ ترکؔ

    ان آنکھوں کی حیرت اور دبیز کروں

    کیوں نہ تجھے بھی آئینہ تجویز کروں

    حرف نگفتہ بیچ میں حائل ہے کب سے

    باب سخن میں خاموشی تقریظ کروں

    فرصت شب میں تیرا دھیان آ جاتا ہے

    کنج چمن کیونکر گھر کی دہلیز کروں

    آنکھیں مند جائیں گی منظر بجھنے تک

    اس اثنا میں خواب کسے تفویض کروں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites