اروشی آسماں سے آ جائے

وید راہی

اروشی آسماں سے آ جائے

وید راہی

MORE BYوید راہی

    اروشی آسماں سے آ جائے

    کوئی ارجن سا روپ دکھلائے

    کوئی بس جائے جو تصور میں

    موت بھی زندگی سے شرمائے

    چاند بکھرا رہا ہے کرنوں کو

    کون آتا ہے سر کو نہوڑائے

    بادلوں کے سجیلے ڈولے پر

    کوئی دلہن پیا کے گھر جائے

    کوئی پھر دل میں چٹکیاں لے لے

    کوئی پھر من کو آ کے بہلائے

    مأخذ :
    • کتاب : Mujalla Dastavez (Pg. 525)
    • Author : Aziz Nabeel
    • مطبع : Edarah Dastavez (2013-14)
    • اشاعت : 2013-14

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY