اس کی خاطر رونا ہنسنا اچھا لگتا ہے

فرحت زاہد

اس کی خاطر رونا ہنسنا اچھا لگتا ہے

فرحت زاہد

MORE BYفرحت زاہد

    اس کی خاطر رونا ہنسنا اچھا لگتا ہے

    جیسے دھوپ میں بارش ہونا اچھا لگتا ہے

    خواب کی کچی ململ میں جب آنکھیں لپٹی ہوں

    یادیں اوڑھ کے سوتے رہنا اچھا لگتا ہے

    سانجھ سویرے کھلتے ہیں جب تیتریوں کے پر

    اس منظر میں منظر ہونا اچھا لگتا ہے

    بارش آ کر برس رہے گی موسم آنے پر

    پھر بھی اپنا درد چھپانا اچھا لگتا ہے

    بادل خوشبو اور جوگی سے آخر کون کہے

    مجھے تمہارا آنا جانا اچھا لگتا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY