اس نے مذاق سمجھا مرا دل دکھا گیا

جینت پرمار

اس نے مذاق سمجھا مرا دل دکھا گیا

جینت پرمار

MORE BYجینت پرمار

    اس نے مذاق سمجھا مرا دل دکھا گیا

    پھر موم بتیوں کو ہمیشہ بجھا گیا

    نکلا تھا خود کو ڈھونڈنے اس ریگزار میں

    مایوس ہو کے راستہ واپس چلا گیا

    اک اک گلی میں ڈھونڈ رہی تھی ہوا مجھے

    لہروں کے ساتھ ساتھ مرا نقش پا گیا

    بستر پہ لیٹے لیٹے مری آنکھ لگ گئی

    یہ کون میرے کمرے کی بتی بجھا گیا

    ستا رہا تھا لان میں سب کام چھوڑ کر

    جھونکا ہوا کا آیا اور ہنس کر چلا گیا

    RECITATIONS

    جینت پرمار

    جینت پرمار,

    جینت پرمار

    اس نے مذاق سمجھا مرا دل دکھا گیا جینت پرمار

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے