اس نے پوچھا تو فقط درد کا افسانہ کھلا

آر پی شوخ

اس نے پوچھا تو فقط درد کا افسانہ کھلا

آر پی شوخ

MORE BYآر پی شوخ

    اس نے پوچھا تو فقط درد کا افسانہ کھلا

    کسی صورت بھی نہ راز دل دیوانہ کھلا

    ہر نفس پائے جنوں کے لئے زنجیر گراں

    کو بہ کو پھرتا رہا پھر بھی یہ دیوانہ کھلا

    جل کے مرتے ہیں پہ اظہار کے شعلوں میں نہیں

    حادثہ یوں بھی ہوا شمع سے پروانہ کھلا

    ہجر کی رات ڈھلی صبح کے ساغر میں مگر

    نیند آئی نہ تری دید کا مے خانہ کھلا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے