اٹھو یہ منظر شب تاب دیکھنے کے لیے

عرفان صدیقی

اٹھو یہ منظر شب تاب دیکھنے کے لیے

عرفان صدیقی

MORE BY عرفان صدیقی

    اٹھو یہ منظر شب تاب دیکھنے کے لیے

    کہ نیند شرط نہیں خواب دیکھنے کے لیے

    عجب حریف تھا میرے ہی ساتھ ڈوب گیا

    مرے سفینے کو غرقاب دیکھنے کے لیے

    وہ مرحلہ ہے کہ اب سیل خوں پہ راضی ہیں

    ہم اس زمین کو شاداب دیکھنے کے لیے

    جو ہو سکے تو ذرا شہ سوار لوٹ کے آئیں

    پیادگاں کو ظفر یاب دیکھنے کے لیے

    کہاں ہے تو کہ یہاں جل رہے ہیں صدیوں سے

    چراغ دیدہ و محراب دیکھنے کے لیے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    عرفان صدیقی

    عرفان صدیقی

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    اٹھو یہ منظر شب تاب دیکھنے کے لیے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY