وفاداروں پہ آفت آ رہی ہے

شکیل جمالی

وفاداروں پہ آفت آ رہی ہے

شکیل جمالی

MORE BY شکیل جمالی

    وفاداروں پہ آفت آ رہی ہے

    میاں لے لو جو قیمت آ رہی ہے

    میں اس سے اتنے وعدے کر چکا ہوں

    مجھے اس بار غیرت آ رہی ہے

    نہ جانے مجھ میں کیا دیکھا ہے اس نے

    مجھے اس پر محبت آ رہی ہے

    بدلتا جا رہا ہے جھوٹ سچ میں

    کہانی میں صداقت آ رہی ہے

    مرا جھگڑا زمانے سے نہیں ہے

    مرے آڑے محبت آ رہی ہے

    ابھی روشن ہوا جاتا ہے رستہ

    وہ دیکھو ایک عورت آ رہی ہے

    مجھے اس کی اداسی نے بتایا

    بچھڑ جانے کی ساعت آ رہی ہے

    بڑوں کے درمیاں بیٹھا ہوا ہوں

    نصیحت پر نصیحت آ رہی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY