وہیں پر مرا سیم تن بھی تو ہے

ثروت حسین

وہیں پر مرا سیم تن بھی تو ہے

ثروت حسین

MORE BYثروت حسین

    وہیں پر مرا سیم تن بھی تو ہے

    اسی راستے میں وطن بھی تو ہے

    بجھی روح کی پیاس لیکن سخی

    مرے ساتھ میرا بدن بھی تو ہے

    نہیں شام تیرہ سے مایوس میں

    بیاباں کے پیچھے چمن بھی تو ہے

    مشقت بھرے دن کے آخیر پر

    ستاروں بھری انجمن بھی تو ہے

    مہکتی دہکتی لہکتی ہوئی

    یہ تنہائی باغ عدن بھی تو ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY