وصل کا بیج بو نہیں پایا

احمد طارق

وصل کا بیج بو نہیں پایا

احمد طارق

MORE BYاحمد طارق

    وصل کا بیج بو نہیں پایا

    رات زندہ تھا سو نہیں پایا

    فانی دنیا کے اس مسافر نے

    وہ بھی کھویا ہے جو نہیں پایا

    میری آنکھوں میں خواب بستے ہیں

    زندگی بھر میں رو نہیں پایا

    رقص کرتا ہوں میں اداسی میں

    میں نے محبوب کو نہیں پایا

    اس نے مجھ سے کہا ملو احمدؔ

    اور مجھ سے یہ ہو نہیں پایا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY