وطن سے دور یاران وطن کی یاد آتی ہے

علی سردار جعفری

وطن سے دور یاران وطن کی یاد آتی ہے

علی سردار جعفری

MORE BYعلی سردار جعفری

    وطن سے دور یاران وطن کی یاد آتی ہے

    قفس میں ہم نوایان چمن کی یاد آتی ہے

    یہ کیسا ظلم ہے پھر سایۂ دیوار زنداں میں

    وطن کے سایۂ سرو و سمن کی یاد آتی ہے

    تصور جس سے رنگیں ہے تخیل جس سے رقصاں ہے

    غزال ہند و آہوئے ختن کی یاد آتی ہے

    کبھی لیلیٰ و شیریں گاہ ہیر و سوہنی بن کر

    نرالے یار کی بانکے سجن کی یاد آتی ہے

    کہاں کا خوف زنداں دہشت دار و رسن کیسی

    قد معشوق و زلف پر شکن کی یاد آتی ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Kulliyat-e-Ali Sardar Jafri Vol.II (Pg. 154)
    • Author : Ali Ahmad Fatmi
    • مطبع : Qaumi Council Baray-e-farog Urdu Zaban, New Delhi (2005)
    • اشاعت : 2005

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے