وہ اگر ہم خیال ہو جائیں

قاسم جلال

وہ اگر ہم خیال ہو جائیں

قاسم جلال

MORE BYقاسم جلال

    وہ اگر ہم خیال ہو جائیں

    ختم سارے ملال ہو جائیں

    وہ ہوں آمادۂ جواب اگر

    ہم سراپا سوال ہو جائیں

    شہر والوں کا ہے خدا حافظ

    چور جب کوتوال ہو جائیں

    ہے جدائی خدا کی اک نعمت

    قربتیں جب وبال ہو جائیں

    ہاتھ سے آس کا عصا نہ گرے

    حوصلے جب نڈھال ہو جائیں

    ہو اگر آپ کی نگاہ کرم

    بے ہنر با کمال ہو جائیں

    آؤ نکلیں انا کے خول سے اب

    رابطے پھر بحال ہو جائیں

    حوصلہ ہار دوں جلالؔ اگر

    کام سارے محال ہو جائیں

    مآخذ:

    • کتاب : Urdu Adab (Pg. 55)
    • Author : Iqbal Hussain
    • مطبع : Iqbal Hussain Publishers (Jan, Feb. Mar 1996)
    • اشاعت : Jan, Feb. Mar 1996

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY