وہ ایک خواب جو دیکھا گیا تھا عجلت میں

پیرزادہ قاسم

وہ ایک خواب جو دیکھا گیا تھا عجلت میں

پیرزادہ قاسم

MORE BYپیرزادہ قاسم

    وہ ایک خواب جو دیکھا گیا تھا عجلت میں

    اسی کا کرب سمیٹا ہے آج فرصت میں

    یہ بات سچ ہے کہ بیگار تو نہیں یہ حیات

    کہ ہم کو زخم تمنا ملے ہیں اجرت میں

    زیاں یہی ہے کہ کچھ اور سوجھتا ہی نہیں

    بس ایک دھیان میں رہتے ہیں لوگ شہرت میں

    ہنر کہو کہ کرامت مگر یہی ہے کہ ہم

    خوشی کو ڈھال بھی سکتے ہیں غم کی صورت میں

    زمین جیتی ہے یا سرزمین دل اس نے

    سوال تشنہ رہا جشن فتح و نصرت میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY