وہ ایک نظر میں مجھے پہچان گیا ہے

نور جہاں ثروت

وہ ایک نظر میں مجھے پہچان گیا ہے

نور جہاں ثروت

MORE BYنور جہاں ثروت

    وہ ایک نظر میں مجھے پہچان گیا ہے

    جو بیتی ہے دل پر مرے سب جان گیا ہے

    رہنے لگا دل اس کے تصور سے گریزاں

    وحشی ہے مگر میرا کہا مان گیا ہے

    تھا ساتھ نبھانے کا یقیں اس کی نظر میں

    محفل سے مری اٹھ کے جو انجان گیا ہے

    اوروں پر اثر کیا ہوا اس ہوش ربا کا

    بس اتنی خبر ہے مرا ایمان گیا ہے

    چہرے پہ مرے درد کی پرچھائیں جو دیکھی

    بے درد مرے گھر سے پریشان گیا ہے

    اس بھیڑ میں ثروتؔ نظر آنے لگی تنہا

    کس کوچے میں تیرا دل نادان گیا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY