وہ حسن سبز جو اترا نہیں ہے ڈالی پر

اختر رضا سلیمی

وہ حسن سبز جو اترا نہیں ہے ڈالی پر

اختر رضا سلیمی

MORE BYاختر رضا سلیمی

    وہ حسن سبز جو اترا نہیں ہے ڈالی پر

    فریفتہ ہے کسی پھول چننے والی پر

    میں ہل چلاتے ہوئے جس کو سوچا کرتا تھا

    اسی کی گندمی رنگت ہے بالی بالی پر

    یہ لوگ سیر کو نکلے ہیں سو بہت خوش ہیں

    میں دل گرفتہ ہوں سبزے کی پائمالی پر

    اک اور رنگ ملا آ کے سات رنگوں میں

    شعاع مہر پڑی جب سے تیری بالی پر

    میں کھل کے سانس بھی لیتا نہیں چمن میں رضاؔ

    مبادا بار گزرتا ہو سبز ڈالی پر

    مأخذ :
    • کتاب : Ghazal Calendar-2015 (Pg. 23.01.2015)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY