وہ اس انداز کی مجھ سے محبت چاہتا ہے

نصرت مسعود

وہ اس انداز کی مجھ سے محبت چاہتا ہے

نصرت مسعود

MORE BY نصرت مسعود

    وہ اس انداز کی مجھ سے محبت چاہتا ہے

    مرے ہر خواب پر اپنی حکومت چاہتا ہے

    مرے ہر لفظ میں جو بولتا ہے مجھ سے بڑھ کر

    مرے ہر لفظ کی مجھ سے وضاحت چاہتا ہے

    بہانہ چاہئے اس کو بھی اب ترک وفا کا

    میں خود اس سے کروں کوئی شکایت چاہتا ہے

    اسے معلوم ہے میرے پروں میں دم نہیں ہے

    مرا صیاد اب مجھ سے بغاوت چاہتا ہے

    وہ کہتا ہے کہ میں اس کی ضرورت بن چکی ہوں

    تو گویا وہ مجھے حسب ضرورت چاہتا ہے

    کبھی اس کے سوالوں سے مجھے لگتا ہے ایسے

    کہ جیسے وہ خدا ہے اور قیامت چاہتا ہے

    اسے معلوم ہے میں نے ہمیشہ سچ لکھا ہے

    وہ پھر بھی جھوٹ کی مجھ سے حمایت چاہتا ہے

    مآخذ:

    • Book: Ghazal Calendar-2015 (Pg. 19.12.2015)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites