وہ میرے سامنے ملبوس کیا بدلنے لگا

ثروت حسین

وہ میرے سامنے ملبوس کیا بدلنے لگا

ثروت حسین

MORE BY ثروت حسین

    وہ میرے سامنے ملبوس کیا بدلنے لگا

    نگار خانۂ ابر و ہوا بدلنے لگا

    تہ زمین کسی اژدہے نے جنبش کی

    بساط خاک پہ منظر مرا بدلنے لگا

    یہ کون اترا پئے گشت اپنی مسند سے

    اور انتظام مکان و سرا بدلنے لگا

    ہوا ہے کون نمودار تین سمتوں سے

    کہ اندروں کا جزیرہ نما بدلنے لگا

    یہ کیسے دن ہیں ہماری زمین پر ثروتؔ

    گلوں کا رنگ نمک کا مزا بدلنے لگا

    مآخذ:

    • کتاب : Range-e-Gazal (Pg. 161)
    • Author : shahzaad ahmad
    • مطبع : Ali Printers, 19-A Abate Road, Lahore (1988)
    • اشاعت : 1988

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY