وہ مجھ سے بے خبر ہیں ان کی عادت ہی کچھ ایسی ہے

حسن بریلوی

وہ مجھ سے بے خبر ہیں ان کی عادت ہی کچھ ایسی ہے

حسن بریلوی

MORE BYحسن بریلوی

    وہ مجھ سے بے خبر ہیں ان کی عادت ہی کچھ ایسی ہے

    میں ان کو یاد کرتا ہوں محبت ہی کچھ ایسی ہے

    میں آؤں وعظ میں سو بار جب یہ دل بھی آنے دے

    کروں کیا واعظو رندوں کی صحبت ہی کچھ ایسی ہے

    میں کس گنتی میں ہوں اور اک مرے دل کی حقیقت کیا

    ہزاروں جان دیتے ہیں وہ صورت ہی کچھ ایسی ہے

    کوئی آئے یہ آتی ہے کوئی جائے یہ جاتا ہے

    مرا دل ہی کچھ ایسا ہے طبیعت ہی کچھ ایسی ہے

    ہمارا کیا بگڑ جاتا حسنؔ تیری سفارش میں

    ہماری ان کی اب صاحب سلامت ہی کچھ ایسی ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Intekhab-e-Sukhan(Jild-2) (Pg. 134)
    • Author : Hasrat Mohani
    • مطبع : uttar pradesh urdu academy (1983)
    • اشاعت : 1983

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY