وہ نہ چاہے تو میں بینا نہ رہوں (ردیف .. ے)

محمود ایاز

وہ نہ چاہے تو میں بینا نہ رہوں (ردیف .. ے)

محمود ایاز

MORE BYمحمود ایاز

    وہ نہ چاہے تو میں بینا نہ رہوں

    وہ جو چاہے تو نظر بھی آئے

    وہ مرے ساتھ ہے سائے کی طرح

    دل کی ضد ہے کہ نظر بھی آئے

    اس سے ہی اذن سفر مانگا ہے

    اس سے ہی زاد سفر بھی آئے

    اس نے توفیق دعا بخشی ہے

    اب دعاؤں میں اثر بھی آئے

    کبھی آہوں سے اٹھے باد مراد

    کبھی اشکوں سے گہر بھی آئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY