وہ شخص جو رکھتا ہے جمال اور طرح کا

خالد معین

وہ شخص جو رکھتا ہے جمال اور طرح کا

خالد معین

MORE BYخالد معین

    وہ شخص جو رکھتا ہے جمال اور طرح کا

    ہے اس سے بچھڑنے کا ملال اور طرح کا

    آثار خرابی کے ہیں، آغاز سے ظاہر

    لگتا ہے کہ گزرے گا، یہ سال اور طرح کا

    اس شہر زیاں کار کے امکان سے باہر

    میں اب کے دکھاؤں گا، کمال اور طرح کا

    ہوتا ہے ہمیشہ ہی نئے رنج میں ڈوبا

    اس جادۂ وحشت پہ دھمال اور طرح کا

    اس شہر فسوں گر کے عذاب اور، ثواب اور

    ہجر اور طرح کا ہے، وصال اور طرح کا

    اب گھر سے نکلنا ہی پڑے گا کہ مخالف

    اس بار! اٹھاتے ہیں، سوال اور طرح کا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY