وہ ترک عشق کا تھا راستہ چلا گیا میں

اعزاز کاظمی

وہ ترک عشق کا تھا راستہ چلا گیا میں

اعزاز کاظمی

MORE BYاعزاز کاظمی

    وہ ترک عشق کا تھا راستہ چلا گیا میں

    بلا ارادہ ہی جس پر چلا چلا گیا میں

    وہ شخص یوں ہی کہیں راستے میں مل گیا تھا

    پلک جھپک کے اسے دیکھتا چلا گیا میں

    مری حیات میں اک دوسری محبت تھی

    اسے بھی اور کوئی مل گیا چلا گیا میں

    خبر نہیں کہ یہاں اور کون ہے موجود

    پتہ کرو کہ یہیں پر ہوں یا چلا گیا میں

    پھر اس کے بعد کہاں تھا مجھے نہیں معلوم

    فقیر عشق سے لے کر دعا چلا گیا میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY