وہ ظلم تو کرتے ہیں سزا سے نہیں ڈرتے

روپ ساگر

وہ ظلم تو کرتے ہیں سزا سے نہیں ڈرتے

روپ ساگر

MORE BYروپ ساگر

    وہ ظلم تو کرتے ہیں سزا سے نہیں ڈرتے

    اس دور کے انسان خدا سے نہیں ڈرتے

    ایسے بھی ہیں کچھ لوگ جو دولت کے نشے میں

    مظلوم کی آہوں سے دعا سے نہیں ڈرتے

    ہر حال میں جینے کی قسم کھائی ہے ہم نے

    ہم اہل محبت ہیں جفا سے نہیں ڈرتے

    ہم زہر بھی پی لیں گے بڑے شوق سے لیکن

    ڈرتے ہیں مسیحا سے دوا سے نہیں ڈرتے

    مر کر بھی دکھا دیں گے ترے چاہنے والے

    ہیں طالب دیدار فنا سے نہیں ڈرتے

    ہر حال میں منزل پہ نظر ہوتی ہے جن کی

    راہوں میں کبھی راہنما سے نہیں ڈرتے

    اس دور میں جینا کوئی آساں نہیں ساگرؔ

    ہر روز جو مرتے ہیں کذا سے نہیں ڈرتے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY