یاد ماضی یہ کیا کیا تو نے

نظر برنی

یاد ماضی یہ کیا کیا تو نے

نظر برنی

MORE BYنظر برنی

    یاد ماضی یہ کیا کیا تو نے

    ہنستے ہنستے رلا دیا تو نے

    مسکرا کر مزاج کیا پوچھا

    دکھتی رگ کو دبا دیا تو نے

    رنگ و بو میں بھی دل کشی نہ رہی

    رنگ ایسا چڑھا دیا تو نے

    مرحبا اے خیال زلف بتاں

    اجڑے گھر کو بسا دیا تو نے

    صبح امید شکریہ تیرا

    تیرگی کو مٹا دیا تو نے

    غم میں آیا نظر نشاط کا رنگ

    ہم کو جینا سکھا دیا تو نے

    جس نظرؔ سے ملا تھا پیار کبھی

    اس نظرؔ سے گرا دیا تو نے

    مآخذ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY