یاد ان کی دل میں آئی وہ آسودگی لئے

اعجاز وارثی

یاد ان کی دل میں آئی وہ آسودگی لئے

اعجاز وارثی

MORE BYاعجاز وارثی

    یاد ان کی دل میں آئی وہ آسودگی لئے

    ظلمت میں آئے جیسے کوئی روشنی لئے

    اے سعیٔ ضبط لوگوں کو کیا دوں ثبوت غم

    ڈر سے ہنسی کے میں نے تو آنسو بھی پی لئے

    ضدین کیفیات کو ہم نے سلا دیا

    جیتے رہے خوشی سے غم عاشقی لئے

    اے سنگ آستاں مرے سجدوں کی لاج رکھ

    آیا ہوں اعتراف شکست خودی لئے

    اعجازؔ کوئی چارہ گر غم نہ مل سکا

    پھرتا رہا ہوں دہر میں دل کی لگی لئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY