یاد یہ کس کی آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

مظفر رزمی

یاد یہ کس کی آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

مظفر رزمی

MORE BYمظفر رزمی

    یاد یہ کس کی آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    سارے ہی غم بھلا گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    زندگی کیا ہے غم ہے کیا سوچتے سوچتے یوں ہی

    مجھ کو ہنسی جو آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    شام فراق میں مجھے تیرے ہی غم کے فیض سے

    نیند اچانک آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    آج وفا کے ساز پر کون یہ عبرت سخن

    میری غزل سنا گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    شدت رنج و یاس میں بھولی ہوئی کوئی خوشی

    اتنا مجھے رلا گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    اچھا ہوا کہ دل کی بات آج کسی کے روبرو

    میری زباں تک آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    یہ بھی خدا کا فضل ہے میری نوائے زندگی

    اوروں کے کام آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    کشمکش حیات میں حد سے بڑھیں جو الجھنیں

    آپ کی یاد آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    رزمیؔ بے قرار کو اہل خلوص کی نظر

    پیار سے جب سلا گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    یاد یہ کس کی آ گئی ذہن کا بوجھ اتر گیا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY