یار سے اب کے گر ملوں تاباںؔ

تاباں عبد الحی

یار سے اب کے گر ملوں تاباںؔ

تاباں عبد الحی

MORE BY تاباں عبد الحی

    یار سے اب کے گر ملوں تاباںؔ

    تو پھر اس سے جدا نہ ہوں تاباںؔ

    یا بھرے اب کے اس سے دل میرا

    عشق کا نام پھر نہ لوں تاباںؔ

    مجھ سے بیمار ہے مرا ظالم

    یہ ستم کس طرح سہوں تاباںؔ

    آج آیا ہے یار گھر میرے

    یہ خوشی کس سے میں کہوں تاباںؔ

    میں تو بیزار اس سے ہوں لیکن

    دل کے ہاتھوں سے کیا کروں تاباںؔ

    وہ تو سنتا نہیں کسی کی بات

    اس سے میں حال کیا کہوں تاباںؔ

    بعد مدت کے ماہرو آیا

    کیوں نہ اس کے گلے لگوں تاباںؔ

    مآخذ:

    Deewan-e-Taban
    • Deewan-e-Taban

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY