یہ جو آباد ہونے جا رہے ہیں

عمران الحق چوہان

یہ جو آباد ہونے جا رہے ہیں

عمران الحق چوہان

MORE BYعمران الحق چوہان

    یہ جو آباد ہونے جا رہے ہیں

    بہت ناشاد ہونے جا رہے ہیں

    جدائی کی گھڑی سر پر کھڑی ہے

    ہم اس کی یاد ہونے جا رہے ہیں

    تری چشم تماشا کی ہوس میں

    فقط برباد ہونے جا رہے ہیں

    گرفتاران دام زلف پیچاں

    بہت آزاد ہونے جا رہے ہیں

    سبھی کچھ بھولتا جاتا ہے اور ہم

    اسی میں شاد ہونے جا رہے ہیں

    سبھی آئینہ رو و آئینہ ہا

    غذائے باد ہونے جا رہے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY