یہ کون آیا شبستاں کے خواب پہنے ہوئے

ساقی فاروقی

یہ کون آیا شبستاں کے خواب پہنے ہوئے

ساقی فاروقی

MORE BYساقی فاروقی

    یہ کون آیا شبستاں کے خواب پہنے ہوئے

    ستارے اوڑھے ہوئے ماہتاب پہنے ہوئے

    تمام جسم کی عریانیاں تھیں آنکھوں میں

    وہ میری روح میں اترا حجاب پہنے ہوئے

    مجھے کہیں کوئی چشمہ نظر نہیں آیا

    ہزار دشت پڑے تھے سراب پہنے ہوئے

    قدم قدم پہ تھکن ساز باز کرتی ہے

    سسک رہا ہوں سفر کا عذاب پہنے ہوئے

    مگر ثبات نہیں بے سبیل رستوں میں

    کہ پاؤں سو گئے ساقیؔ رکاب پہنے ہوئے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    ساقی فاروقی

    ساقی فاروقی

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    یہ کون آیا شبستاں کے خواب پہنے ہوئے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY