یہ نہیں وہ رہ گزر کچھ اور ہے

عادل حیات

یہ نہیں وہ رہ گزر کچھ اور ہے

عادل حیات

MORE BYعادل حیات

    یہ نہیں وہ رہ گزر کچھ اور ہے

    میرے خوابوں کا نگر کچھ اور ہے

    رنگ تھے کل آنکھ میں کچھ اور ہی

    آج بھی رقص شرر کچھ اور ہے

    لب پہ میرے ہے تبسم کا غبار

    ہاں مگر زخم جگر کچھ اور ہے

    خود کے ہونے کا گماں ہے بھی تو کیا

    سامنے اپنے مگر کچھ اور ہے

    شب میں تھیں چاروں طرف شادابیاں

    حادثہ وقت سحر کچھ اور ہے

    ہو گیا ہے ختم عادلؔ راستہ

    پر ترا عزم سفر کچھ اور ہے

    مآخذ :
    • کتاب : Sitara Sang (Gazals) (Pg. 30)
    • Author : Adil Hayat
    • مطبع : Nirali Duniya Publications (2004)
    • اشاعت : 2004

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY