یہ رکے رکے سے آنسو یہ دبی دبی سی آہیں

مجروح سلطانپوری

یہ رکے رکے سے آنسو یہ دبی دبی سی آہیں

مجروح سلطانپوری

MORE BYمجروح سلطانپوری

    یہ رکے رکے سے آنسو یہ دبی دبی سی آہیں

    یوں ہی کب تلک خدایا غم زندگی نباہیں

    کہیں ظلمتوں میں گھر کر ہے تلاش دشت رہبر

    کہیں جگمگا اٹھی ہیں مرے نقش پا سے راہیں

    ترے خانماں خرابوں کا چمن کوئی نہ صحرا

    یہ جہاں بھی بیٹھ جائیں وہیں ان کی بارگاہیں

    کبھی جادۂ طلب سے جو پھرا ہوں دل شکستہ

    تری آرزو نے ہنس کر وہیں ڈال دی ہیں بانہیں

    مرے عہد میں نہیں ہے یہ نشان سربلندی

    یہ رنگے ہوئے عمامے یہ جھکی جھکی کلاہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    یہ رکے رکے سے آنسو یہ دبی دبی سی آہیں نعمان شوق

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY