یہ زمیں چاند ستاروں کا بدل کیسے ہو

اشفاق حسین

یہ زمیں چاند ستاروں کا بدل کیسے ہو

اشفاق حسین

MORE BYاشفاق حسین

    یہ زمیں چاند ستاروں کا بدل کیسے ہو

    سوچتا میں بھی بہت کچھ ہوں عمل کیسے ہو

    صورت حال بدل جاتی ہے اک لمحے میں

    آدمی اپنے ارادوں میں اٹل کیسے ہو

    کن درختوں سے لگا رکھی ہے امید ثمر

    شاخ ہی جب نہ ہو سرسبز تو پھل کیسے ہو

    سوچتے کچھ ہیں عمل کچھ ہے نتیجہ کچھ ہے

    ایسی صورت میں کوئی مسئلہ حل کیسے ہو

    درد سے کوئی علاقہ نہ تعلق غم سے

    صرف لفظوں کے برتنے سے غزل کیسے ہو

    ہر ملاقات ادھوری رہی اس الجھن میں

    یعنی اظہار محبت میں پہل کیسے ہو

    میرے محبوب کا اردو سے ہے رشتہ کم کم

    مینوں آندی نئیں پنجابی تے گل کیسے ہو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY