aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

زاہد نہیں مسجد سے کم حرمت مے خانہ

عشق اورنگ آبادی

زاہد نہیں مسجد سے کم حرمت مے خانہ

عشق اورنگ آبادی

MORE BYعشق اورنگ آبادی

    زاہد نہیں مسجد سے کم حرمت مے خانہ

    مستوں کی جماعت میں محراب ہے پیمانہ

    کیوں زلف تری الجھی رہتی ہے اے جانانہ

    حاضر ہے دل صد چاک درکار ہو گر شانہ

    دیکھے جو تری صورت ہو جائے ہے دیوانہ

    ہے عکس سے تجھ رخ کے آئینہ پری خانہ

    اس دل کا مرے جلنا رکھتا ہے وہ کیفیت

    دیکھے گا جو پروانہ ہو جائے گا مستانہ

    اک نقد نگہ پر عشقؔ بکتا ہے تو کر سودا

    دے بہر خریداری دیدار کا بیعانہ

    مأخذ:

    Deewan-e-Ishq(Rekhta Website) (Pg. 76)

      • ناشر: ادارہ ادبیات اردو، حیدرآباد
      • سن اشاعت: 1960

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے