ظاہراً موت ہے قضا ہے عشق

عبد الغفور نساخ

ظاہراً موت ہے قضا ہے عشق

عبد الغفور نساخ

MORE BYعبد الغفور نساخ

    ظاہراً موت ہے قضا ہے عشق

    پر حقیقت میں جاں فزا ہے عشق

    دیتا ہے لاکھ طرح سے تسکین

    مرض ہجر میں دوا ہے عشق

    تا دم مرگ ساتھ دیتا ہے

    ایک محبوب با وفا ہے عشق

    دیکھ نساخؔ گر نہ ہوتا کفر

    کہتے بے شبہ ہم خدا ہے عشق

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    ظاہراً موت ہے قضا ہے عشق نعمان شوق

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY