زمانے کی فصیلوں کو گرا کر

شاہدہ مجید

زمانے کی فصیلوں کو گرا کر

شاہدہ مجید

MORE BY شاہدہ مجید

    زمانے کی فصیلوں کو گرا کر

    کبھی دیکھیں گے خود کو آزما کر

    مرے دل پر بھی نازل ہو سکینت

    مرے مرشد مرے حق میں دعا کر

    تمہاری راہ کو روشن کیا ہے

    چراغ جان کو میں نے جلا کر

    کسی دن ہم تمہاری خاکداں کو

    چلے جائیں گے اک ٹھوکر لگا کر

    تمہارا راستہ ہموار کر دوں

    میں اپنی ذات کا پتھر ہٹا کر

    فلک کے پار مجھ کو دیکھنا ہے

    ستاروں سے بھری چادر ہٹا کر

    اکیلے بیٹھ کے روتے رہے ہم

    تمہاری یاد میں دنیا بھلا کر

    کھلی آنکھوں میں سپنے دیکھتی ہوں

    خود اپنی نیند کا پنچھی اڑا کر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY