زمیں پہ چل نہ سکا آسمان سے بھی گیا

شاہد کبیر

زمیں پہ چل نہ سکا آسمان سے بھی گیا

شاہد کبیر

MORE BY شاہد کبیر

    زمیں پہ چل نہ سکا آسمان سے بھی گیا

    کٹا کے پر کو پرندہ اڑان سے بھی گیا

    کسی کے ہاتھ سے نکلا ہوا وہ تیر ہوں جو

    ہدف کو چھو نہ سکا اور کمان سے بھی گیا

    بھلا دیا تو بھلانے کی انتہا کر دی

    وہ شخص اب مرے وہم و گمان سے بھی گیا

    تباہ کر گئی پکے مکان کی خواہش

    میں اپنے گاؤں کے کچے مکان سے بھی گیا

    پرائی آگ میں کودا تو کیا ملا شاہدؔ

    اسے بچا نہ سکا اپنی جان سے بھی گیا

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    زمیں پہ چل نہ سکا آسمان سے بھی گیا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY