زوال فکر و فن تھا اور میں تھا

اقبال آصف

زوال فکر و فن تھا اور میں تھا

اقبال آصف

MORE BYاقبال آصف

    زوال فکر و فن تھا اور میں تھا

    عجب قحط سخن تھا اور میں تھا

    پرانے لفظ تفسیریں نئی تھیں

    غزل کا بانکپن تھا اور میں تھا

    عجب روداد تھی میرے سفر کی

    لباس بے شکن تھا اور میں تھا

    سزا تھی امتحاں تھا کیا پتہ اک

    سلگتا اگنی بن تھا اور میں تھا

    وہی اس کی شکایت تھی پرانی

    وہی میرا چلن تھا اور میں تھا

    وہی مٹی وہی پانی ہوا تھی

    وہی میرا وطن تھا اور میں تھا

    وہ اک لمحہ کہ میرے سر پہ آصفؔ

    بہت دشوار کن تھا اور میں تھا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے