زندگی ایک طلسمات کا آئینہ ہے

حیات وارثی

زندگی ایک طلسمات کا آئینہ ہے

حیات وارثی

MORE BYحیات وارثی

    زندگی ایک طلسمات کا آئینہ ہے

    دن جسے کہتے ہیں وہ رات کا آئینہ ہے

    جو بھی کہنا ہو تجھے میری طرف دیکھ کے کہہ

    میرا چہرہ ترے جذبات کا آئینہ ہے

    شخصیت میں تری اتنی ہی چمک بھی ہوگی

    جتنا روشن تری خدمات کا آئینہ ہے

    عہد نو لفظوں کے مفہوم سے واقف ہی نہیں

    کتنا بے عکس خیالات کا آئینہ ہے

    اب بزرگوں کی وراثت بھی نہیں ہے محفوظ

    دھندھلا دھندلا سا روایات کا آئینہ ہے

    تیرے رخسار کا غازہ ہیں بدلتے موسم

    زلف برہم تری برسات کا آئینہ ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے