زندگی جبر ہے اور جبر کے آثار نہیں

فانی بدایونی

زندگی جبر ہے اور جبر کے آثار نہیں

فانی بدایونی

MORE BY فانی بدایونی

    زندگی جبر ہے اور جبر کے آثار نہیں

    ہائے اس قید کو زنجیر بھی درکار نہیں

    بے ادب گریۂ محرومئ دیدار نہیں

    ورنہ کچھ در کے سوا حاصل دیوار نہیں

    آسماں بھی ترے کوچہ کی زمیں ہے لیکن

    وہ زمیں جس پہ ترا سایۂ دیوار نہیں

    ہائے دنیا وہ تری سرمہ تقاضہ آنکھیں

    کیا مری خاک کا ذرہ کوئی بیکار نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY