زندگی کیا ہے جو دل ہو تشنۂ ذوق وفا (ردیف .. ھ)

اختر علی اختر

زندگی کیا ہے جو دل ہو تشنۂ ذوق وفا (ردیف .. ھ)

اختر علی اختر

MORE BYاختر علی اختر

    زندگی کیا ہے جو دل ہو تشنۂ ذوق وفا

    یعنی یہ پردہ تو اٹھ سکتا ہے آسانی کے ساتھ

    گفتگوئے صورت و معنی ہے عنوان حیات

    کھیلتے ہیں وہ مری فطرت کی حیرانی کے ساتھ

    تم نے ہر ذرے میں برپا کر دیا طوفان شوق

    اک تبسم اس قدر جلووں کی طغیانی کے ساتھ

    دل کی آبادی ہے اخترؔ دل کی بربادی کا نام

    اک تعلق ہے مری ہستی کو ویرانی کے ساتھ

    مآخذ
    • کتاب : Noquush (Pg. B332 E-348)
    • مطبع : Nuqoosh Press Lahore (May June 1954)
    • اشاعت : May June 1954

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY