زندگی تھام لیا کرتے ہیں بڑھ کر لمحے

اشوک مزاج بدر

زندگی تھام لیا کرتے ہیں بڑھ کر لمحے

اشوک مزاج بدر

MORE BYاشوک مزاج بدر

    زندگی تھام لیا کرتے ہیں بڑھ کر لمحے

    وقت آنے پہ بدلتے ہیں مقدر لمحے

    آ بھی جا تجھ کو بلاتے ہیں یہ کہہ کر لمحے

    پھر نہ آئیں گے بہاروں کے معطر لمحے

    ہر گھڑی ایک سا موسم بھی کہاں رہتا ہے

    ہیں کہیں پھول سے کومل کہیں پتھر لمحے

    سب میں یاری ہیں یہاں دوستی یاری سکھ دکھ

    کس نے دیکھے ہیں یہاں عمر سے بڑھ کر لمحے

    زندگی آج بھی مصروف بہت ہے لیکن

    ہم چلے آئے ترے پاس چرا کر لمحے

    ایک نا چیز کو فن کار بنا دیتے ہیں

    حاصل عمر ہوا کرتے ہیں دم بھر لمحے

    مأخذ :
    • کتاب : Main Ashok Hoon Main Mizaj Bhee (Pg. 102)
    • Author : Ashok Mizaj Badr
    • مطبع : Shere Acadami, Bhopal (2017)
    • اشاعت : 2017

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے