خیر گزری کہ تو نہیں دل میں

الہڑبیکانیری

خیر گزری کہ تو نہیں دل میں

الہڑبیکانیری

MORE BYالہڑبیکانیری

    خیر گزری کہ تو نہیں دل میں

    اب کوئی آرزو نہیں دل میں

    آئینے کا بھرم بھی ٹوٹ گیا

    عکس وہ ہو بہ ہو نہیں دل میں

    گم ہوا میں بھی کھو گیا تو بھی

    اب کوئی جستجو نہیں دل میں

    کون سی شے سے دل مخاطب ہو

    کوئی شے روبرو نہیں دل میں

    مے پہ موقوف دھڑکنیں دل کی

    ایک قطرہ لہو نہیں دل میں

    ذکر جام و سبو تو ہے الھڑؔ

    فکر جام و سبو نہیں دل میں

    مأخذ :
    • کتاب : Hindustani Gazle.n

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے